Browse By

’شدت پسندوں‘ کے ٹھکانوں پر بمباری

پاکستان کے قبائلی علاقے کرم اور اورکزئی ایجنسی میں پاکستانی جیٹ طیاروں نے ’شدت پسندوں‘ کے ٹھکانوں پر بمباری کی ہے لیکن حکام نے جانی نقصان کے بارے میں کوئی معلومات فراہم نہیں کی ہیں۔

پولیٹیکل انتظامیہ کے اہلکاروں نے بتایا کہ جمعہ کی صبح وسطی کرم میں ایک گورنمنٹ گرلز پرائمری سکول منڈان اور مسوزئی کے مقام پر دو جیٹ طیاروں نے بمباری کی۔
اہلکاروں کے مطابق جیٹ طیارے بیس منٹ تک ان علاقوں میں بمباری کرتے رہے۔
انھوں نے بتایا کہ ان حملوں میں اب تک جانی نقصان کے بارے میں کوئی اطلاع موصول نہیں ہوئی کیونکہ یہ علاقہ پہاڑوں میں گھرا ہوا ہے اور یہاں رابطہ مشکل سے ہی ہوتا ہے۔
نامہ نگار عزیزاللہ خان کے مطابق اہلکاروں نے بتایا کہ منڈان اور مسوزئی میں شدت پسندوں کے ٹھکانے ہیں جنھیں جیٹ طیاروں نے نشانہ بنایا۔ کرم ایجنسی سے متصل اپر اورکزئی ایجنسی میں بھی جیٹ طیاروں نے جمعہ کو بمباری کی۔
سرکاری اہلکاروں نے بتایا کہ طیاروں نےمحمد زئی اور اس کے قریبی علاقوں میں مشتبہ ٹھکانوں کو نشانہ بنایا لیکن یہاں بھی جانی نقصان کا علم نہیں ہو سکا ہے۔
بعض ٹی وی چینلوں نے اورکزئی ایجنسی میں اٹھارہ جبکہ کرم ایجنسی میں آٹھ شدت پسندوں کے ہلاک ہونے کی خبریں دی ہیں لیکن سرکاری حکام نے ان خبروں کی تصدیق نہیں کی ہے۔
کرم ایجنسی اور اپراورکزئی ایجنسی کی سرحدیں خیبر پختونخواہ کے ضلع ہنگو سے ملتی ہیں جہاں گزشتہ روز ایک خود کش حملے میں چونتیس افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *